نصیر الدین شاہ کہتے ہیں کہ مغل مہاجر تھے، ٹرول ہو جاتے ہیں۔

نصیر الدین شاہ نے ایک انٹرویو میں مغلوں کو پناہ گزین کہنے کے بعد تنازعہ کھڑا کر دیا تھا۔

0 21

 

نصیر الدین شاہ نے ایک انٹرویو میں مغلوں کو پناہ گزین کہنے کے بعد تنازعہ کھڑا کر دیا تھا۔

نصیرالدین شاہ کو ایک انٹرویو میں مغل مہاجرین کہنے کے بعد آن لائن ردعمل کا سامنا ہے۔ سوشل میڈیا پر ان کے اس تبصرے پر نیٹیزنز اپنے ردعمل کا اظہار کر رہے ہیں۔

تجربہ کار اداکار نصیر الدین شاہ تنازعات میں نئے نہیں ہیں۔ وہ ماضی میں بھی حساس ریمارکس دینے پر مشکل میں پڑ گئے تھے۔

ایک حالیہ انٹرویو میں مغلوں کو پناہ گزین کہنے کے بعد اداکار کو ایک بار پھر آن لائن ردعمل کا سامنا

ہے۔ نصیرالدین شاہ سوشل میڈیا پر نیٹیزنز کے ذریعہ ٹرول ہو رہے ہیں۔


لیونل میسی سے 8 کامیابی کے اسباق


نصیر الدین شاہ نے انٹرویو میں کیا کہا؟

ستمبر میں، نصیرالدین شاہ نے طالبان کے بارے میں اپنے خیالات کے لیے سوشل میڈیا پر گلدستے اور اینٹ مار دونوں کمائے۔

اب، چند مہینوں کے بعد، تجربہ کار اداکار یہ دعویٰ کرتے ہوئے سرخیوں میں ہیں کہ مغل ہندوستان کو اپنا وطن بنانے کے لیے آئے تھے۔

ایک نظر ڈالیں:

نصیرالدین شاہ کی ایک ویڈیو سوشل میڈیا پر گردش کر رہی ہے، جس میں انہیں یہ کہتے ہوئے سنا جا سکتا ہے کہ

”مغلوں کے نام نہاد مظالم کو ہر وقت اجاگر کیا جاتا ہے، ہم بھول جاتے ہیں کہ مغل وہ لوگ ہیں جنہوں

نے ملک کے لیے اپنا حصہ ڈالا ہے۔ یہ وہ لوگ ہیں جنہوں نے ملک میں لازوال یادگاریں چھوڑی ہیں، جنہوں نے رقص، موسیقی، مصوری، ادب کی روایت چھوڑی ہے۔ مغل یہاں کو اپنا وطن بنانے آئے تھے،

آپ چاہیں تو انہیں مہاجر کہہ سکتے ہیں۔”

نصیر الدین شاہ کے تبصرے پر نیٹیزنز کا رد عمل

نصیر الدین شاہ کے اس بیان کے بعد اداکار کو سوشل میڈیا پر بے دردی سے ٹرول کیا جا رہا ہے۔ جب کہ ایک نیٹیزین نے کہا، "حملہ آوروں کے ساتھ یہ بے لگام جنون کیوں؟

ایک نیا کم – ‘مغل مہاجر ہیں’…۔ ایک اور نے لکھا، ’’وہ اپنے حواس کھو بیٹھا ہے، اسے سنجیدگی سے

لینے کی ضرورت نہیں ہے۔ ہمارا ملک ناشکرے لوگوں سے بھرا ہوا ہے اور وہ ان میں سے ایک ہے۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.