بالی وڈ کے مسٹر پرفیکشنسٹ عامر خان اور کرن راؤ نے باہمی رضامندی سے طلاق کا اعلان کردیا

5

بالی وڈ کے مسٹر پرفیکشنسٹ عامر خان اور کرن راؤ نے باہمی رضامندی سے طلاق کا اعلان کردیا

ہم ایک نئی زندگی کا آغاز چاہتے ہیں لیکن اس میں ہم شوہراوربیوی کی حیثیت سے نہیں ہوں گے۔ بالی وڈ جوڑے کا بیان

نئی دہلی : بالی وڈ کے مسٹر پرفیکشنسٹ عامر خان نے اپنی اہلیہ کرن راؤ سے علیحدگی اور طلاق کا اعلان کر دیا ہے۔

بھارتی میڈیا کی رپورٹ کے مطابق عامر خان اوراہلیہ کرن راؤ نے باہمی رضامندی سے اپنی شادی ختم کرنے کا اعلان کیا اور کہا کہ وہ اپنے بیٹے اذان کی پرورش مل کر کریں گے۔

عامر خان اور ان کی اہلیہ کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا کہ ہم نے اپنی شادی کے خوبصورت 15 سال بہترین اندازمیں گزارے ۔

ان سالوں میں خوشیاں بھی تھیں اور ہمارا رشتہ یقین، احترام اورمحبت پرمبنی تھا۔

دونوں کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا کہ اب ہم ایک نئی زندگی کا آغاز چاہتے ہیں لیکن زندگی کے اس نئے مرحلے میں ہم میاں بیوی نہیں ہوں گے لیکن ہم اپنے بیٹے کے والدین اور ایک فیملی کی طرح ہی رہیں گے۔

گلوکار عارف لوہار کی والدہ لندن میں انتقال کرگئیں      

  

عامر خان اور اُن کی اہلیہ کرن کی جانب سے جاری بیان میں مزید کہا گیا کہ ہم نے ایک دوسرے سے علیحدگی کا فیصلہ کچھ عرصہ قبل ہی کیا تھا جس کا ہم اب باقاعدہ اعلان کر رہے ہیں لیکن ہم اپنے بیٹے کی پرورش و دیکھ بھال والدین کے طورپر ہی کریں گے۔

اس کے علاوہ ہم اپنے پراجیکٹس پر بھی ویسے ہی کام کریں گے جیسے ہم پہلے کرتے رہے ہیں۔ عامر خان اور ان کی اہلیہ نے اپنی طلاق کا اعلان کرتے ہوئے دعائیں دینے والے مداحوں کا شکریہ بھی ادا کیا۔ انہوں نے اس وقت میں ساتھ دینے پر اہل خانہ کا بھی شکریہ ادا کیا۔ ہم نے اپنے مداحوں اور خیر خواہوں سے نیک تمناؤں کی اپیل کرتے ہیں اور اُمید کرتے ہیں کہ ہماری طرح آپ بھی ہماری اس طلاق کو انجام نہیں بلکہ ایک نئے سفر کے آغاز کے طور پر دیکھیں گے۔
یاد رہے کہ بالی وڈ اداکار عامر خان کی کرن سے ملاقات فلم ”لگان” کی شوٹنگ کے دوران ہوئی تھی۔ جس میں عامر خان نے ہیرو کا کردار ادا کیا تھا جبکہ کرن اسسٹنٹ ڈائریکٹر تھیں۔ دونوں کی شادی 28 دسمبر 2005 میں ہوئی تھی اور ان کا ایک بیٹا اذان بھی ہے۔ اس سے پہلے بھی عامر خان نے رینا دتہ سے شادی کی تھی جن سے ان کے دو بچے جنید خان اور ایرا خان ہیں۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.