بیرون ممالک سے پاکستان آنے والے مسافروں کے لئے ایڈوائزری جاری

28

بیرون ممالک سے پاکستان آنے والے مسافروں کے لئے ایڈوائزری جاری

مسافروں کے لیے 72 گھنٹے قبل پی سی آر منفی ٹیسٹ رپورٹ دکھانا لازم،پاکستان آمد پر ایئرپورٹ پر دوبارہ پی سی آر ٹیسٹ کیا جائے گا، منفی ہونے پر 10 دن قرنطینہ کرنے کے پابند ہوں گے،مثبت رپورٹ پر مسافر کو ضلعی انتظامیہ کے زیر انتظام کر قرنطیہ سینٹر بھیجوایا جائے گا

اسلام آباد (اردونیوز تازہ ترین  ۔ 01 مئی 2021ء ) بیرون ممالک سے پاکستان آنے والے مسافروں کے لئے ایڈوائزری جاری کردی گئی ہے۔تفصیلات کے مطابق نیشنل کمانڈ آپریشن سینٹر کے مطابق پاکستان آنے والی ائر ٹریفک کو 80 فیصد تک کم کرنے کی ہدایت کی گئی ہے۔

بیرون ملک سے پاکستان میں ایئر ٹریفک کو بیس فیصد تک محدود رکھنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔فضائی سفر محدود رکھنے کی پابندی 4 سے 20 مئی تک نافذ العمل ہوگی۔

پاکستان آنے والے مسافروں کو 72 گھنٹے قبل پی سی آر منفی ٹیسٹ رپورٹ دکھانا لازم ہوگی۔مسافروں کی پاکستان آمد پر ایئرپورٹ پر دوبارہ پی سی آر ٹیسٹ کیا جائے گا۔

مسافروں کا ٹیسٹ منفی ہونے پر 10 دن قرنطینہ کرنے کے پابند ہوں گے جب کہ مثبت رپورٹ پر مسافر کو ضلعی انتظامیہ کے زیر انتظام کر قرنطیہ سینٹر بھیجوایا جائے گا۔

این ڈی ایم اے انٹرنیشنل ایئرپورٹ پر پی سی آر ٹیسٹ کٹ کی فراہمی یقینی بنانے کی پابند ہوگی۔

23 اپریل کو ملک میں کورونا کی بگڑتی صورت حال کے پیش نظر سول ایوی ایشن اتھارٹی نے نیا سفری ہدایت نامہ جاری کر دیا ۔سی اے اے کی نئی ٹریول ایڈوائزری کے تحت کیٹیگری سی میں شامل 23 ممالک کے مسافروں کی آمد پر پابندی کی مدت میں توسیع کردی گئی۔

کیٹیگری سی ممالک سے مسافروں کی آمد پر سفری پابندیاں 30اپریل تک نافذالعمل رہیں گی۔ سی اے اے نے نئی ٹریول ایڈوائزری نوٹیفکیشن این سی او سی فیصلوں کے تناظر میں جاری کیا۔

کیٹیگری سی میں جنوبی افریقہ، برزایل، زمبابوے اور بھارت سمیت 23 ممالک شامل ہیں۔سی کیٹیگری ممالک سے آمد کی اجازت این سی او سی کے این او سی سے مشروط قرار دے دی گئی۔مذکورہ کیٹیگری کے ممالک میں موجود پاکستانی، نائیکوپ اور پی او سی کارڈ ہولڈرز پاکستانی کی آمد پر بھی پابندی برقرار رہے گی، سفری پابندیوں پر نظرثانی 28 اپریل کو نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر کے اجلاس میں کی جائے گی

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.